وہ کرے بات تو ہر لفظ سے خوشبو آئے




وہ کرے بات تو ہر لفظ سے خوشبو آئے
ایسی بولی وہی بولے جسے اردو آئے

Hum Nazuk Dil Waly


ہم نازک نازک دل والے
بس ایسے ہی تو ہوتے ہیں
*
کبھی ہنستے ہیں کبھی روتے ہیں
کبھی دل میں خواب پروتے ہیں
*
کبھی محفل محفل پھرتے ہیں
کبھی ذات میں تنہا ہوتے ہیں
*
کبھی چپ کی مہر سجاتے ہیں
کبھی گیت لبوں پر ہوتے ہیں
*
کبھی سب کا دل بہلاتے ہیں
کبھی خود میں تنہا ہوتے ہیں
*
کبھی شب بھر جاگے رہتے ہیں
کبھی لمبی تان کے سوتے ہیں

Romantic Urdu Poetry by Mumtaz Naseem


تُجھ پہ میرا جو مان تھا وہ ٹُوٹ گیا



تُجھ پہ میرا جو مان تھا وہ ٹُوٹ گیا

خاموش عہد و پیمان تھا وہ ٹُوٹ گیا
ساتھ ہیں جیسے اجنبی اجنبی سے
تعلق دلوں کے درمیان تھا وہ ٹُوٹ گیا
بکھر گیا وہ عہدِ وَفا ، تو ہوا معلوم
وہ یقین بھی ، گُمان تھا وہ ٹُوٹ گیا
پتھر یوں ہی نہیں بنتے یہاں اہلِ دل
حسّاس کانچ سامان تھا وہ ٹُوٹ گیا
استعمال ہوگیا چاہت کے کھیل میں
دل سے دل پریشان تھا وہ ٹُوٹ گیا
بارشوں کی چاہتیں اب راس نہیں
اِک کچّا سا مکان تھا وہ ٹُوٹ گیا
فقط نام کا نہیں دل کا تھا وہ کبیر
سیدھا سا انسان تھا وہ ٹُوٹ گیا